1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

گیمبیا کی مرکزی اسلامی کونسل نے بھی قادیانیوں کے دائرہ اسلام سے خارج ہونے کا اعلان کر دیا

محمدابوبکرصدیق نے 'متفرق خبریں' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ فروری 12, 2015

  1. ‏ فروری 12, 2015 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    گیمبیا کی مرکزی اسلامی کونسل نے بھی قادیانیوں کے دائرہ اسلام سے خارج ہونے کا اعلان کر دیا
    قادیانیو مبارک ہو۔ یلاش نے مرزا قادیانی کی تبلیغ دنیا کے کناروں تک پہنچا دی ہے
    گیمبیا: مرکزی اسلامی کونسل نے احمدیہ جماعت سے متعلق اپنا موقف پیش کردیا
    گیمبیا کی اسلامی کونسل نے احمدیہ جماعت سے متعلق مسلم امہ کا موقف پیش کردیا۔یہ بیان جمعہ کی شام کو ملکی ٹی وی چینل پر نشر ہوا،مزید پڑھیئے:
    گیمبیا کی مرکزی اسلامی کونسل جو کہ ملک میں اسلامی معاملات سے متعلق عمومی سرگرمیوں کا واحد ذمہ دار ادارہ ہے،نے حضوراکرم ﷺ کی حدیث (الدین النصیحہ) کی بنیاد پر کہا ہے کہ دین ایک نصیحت ہے۔اور یہ کونسل کی ذمہ داری ہے کہ وہ گیمبیا میں دین اسلام سے متعلق کسی بھی قسم کی غلط فہمی کو مستند حوالہ جات سےدور کرے۔
    اس لیے کونسل گیمبیا کی عوام الناس بالخصوص مسلم امہ کے سامنے قادیانیت جو کہ احمدیہ جماعت کے نام سے مشہور ہے ،سے متعلق مسلم امہ کا موقف پیش کرتی ہے۔
    عصر حاضر اور اس سے پہلے کے دنیا بھر کے اسلامی علماء جن میں پاکستان جہاں پر اس (فتنے) کی بنیاد ہے ،کے علماء بھی شامل ہیں، اس بات پر متفق ہیں کہ احمدیہ جماعت مسلمان نہیں اور اس امرکی بنیاد درج ذیل دلائل پر ہے:
    درحقیقت،اس سب کے باوجود جو احمدیہ قرآن اور حدیث سے پیش کرنے کی کوشش کرتی ہے، ان کی بنیاد مندرجہ ذیل غلط ستونوں پر ہے: وہ اس بات پر ایمان رکھتے ہیں کہ غلام احمد مسیح موعود ہے۔وہ یہ عقیدہ رکھتے ہیں کہ اللہ عزوجل روزہ رکھتا ہے،نماز پڑھتا ہے،سوتا ہے، جاگتا ہے،دستخط کرتا ہے،غلطیاں کرتا ہے اور جماع کرتا ہے۔
    قادیانیوں کا یہ عقیدہ ہے کہ نبوت آنحضرت ﷺ پر ختم نہیں ہوئی،بلکہ جاری ہے اور خدا ضرورت کے وقت پیغمبر بھیجتا ہے۔اور یہ کہ غلام احمد تمام انبیاء سے افضل ہے۔
    وہ یہ کہتے ہیں کہ غلام احمد کے لائے ہوئے قرآن کے سوا کوئی قرآن نہیں اور اس کی تعلیمات کی روشنی کے سوا کوئی حدیث نہیں۔اور غلام احمد کی سرپرستی کے بغیر کوئی پیغمبر نہیں۔ان کا یہ عقیدہ ہے کہ ہر مسلمان قادیانی نہ بننے تک کافر ہے۔اور جو کوئی کسی غیرقادیانی کو عورت دیتا ہے یا کسی غیرقادیانی عورت سے شادی کرتا ہے وہ بھی کافر ہے۔
    وہ یہ عقیدہ رکھتے ہیں کہ غیر احمدیوں کے پیچھے نماز نہیں ہوتی،اور یہی وجہ ہے کہ انہوں نے گیمبیا کے دوردراز کے دیہاتوں میں بہت تفرقہ پیدا کیا ہے۔
    احمدیہ جماعت سے متعلق مسلمانوں کا موقف
    1953 میں پاکستان کے لوگوں نے احتجاج کیا اور اس بات کا مطالبہ کیا کہ اس وقت کے وزیر خارجہ ظفراللہ خان کو مستعفی کیا جائے۔اور قادیانی جماعت کو غیرمسلم اقلیت سمجھا گیا۔
    پاکستان کی قومی کونسل (مرکزی پارلیمینٹ) نے ان کے سربراہ مرزا ناصر احمد کے ساتھ مباحثہ کیا۔پارلیمینٹ نے فیصلہ دیا اور قادیانیوں/احمدیوں کو غیرمسلم اقلیت تسلیم کیا گیا۔
    الازہر شریف میں اسلامک ریسرچ اکیڈمی نے اپنے فتویٰ کی تجدید کی کہ احمدیہ کے پیروکار غیرمسلم ہیں اور اس امر کی تصدیق کی کہ اس عقیدہ کا اسلام کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔
    یکم ربیع الاول 1394 بمطابق اپریل 1974 مسلم ورلڈ لیگ کے ہیڈکوارٹرز میں مکہ میں ایک جنرل کانفرنس منعقد ہوئی۔اور اس میں دنیا بھر سے بین الاقوامی اسلامی تنظیموں کے نمائندگان اور ملکی سطح کے ممبران نے شرکت کی۔کانفرنس نے اس گروہ کے کافر اور دائرہ اسلام سے خارج ہونے کا اعلان کیا۔اور حکومتوں اور مسلمانوں کو آگاہ کیا کہ وہ اس پیش آنے والے خطرے کے خلاف جدوجہد کریں اور احمدیوں سے کوئی معاملہ نہ رکھیں۔
    گیمبیا کے اسلامی علماء کا موقف
    انہوں نے اس گروہ کے خلاف عظیم خدمات سرانجام دیں اور اس بات کی وضاحت کی کہ یہ (قادیانی لوگ) دائرہ اسلام سے خارج ہیں۔اور ایسا 1950 کی دہائی سے ہی تھا جب یہ لوگ اس ملک میں وارد ہوئے۔
    ان علماء میں سابقہ امام رتیب،بنجول کے امام محمد لامین بہ ،گنجور کے شیخ خطاب بوجانگ،سیفو کے شیخ کارالانگ کنتیحہ،کیانگ کے شیخ محمد لامین فیدرا،گنجور کے شیخ عمر بن جنگ اور تلندنگ کے شیخ جبرائیل مہدی کجابی (اللہ تعالیٰ ان سب کو غریق رحمت فرمائے) کے نام شامل ہیں۔
    اس لیے گیمبیا کی مرکزی اسلامی کونسل یہ فیصلہ دیتی ہے کہ احمدیہ جماعت ایک غیرمسلم گروپ ہے،اور یہ بات دنیا بھر کی علمی مجالس کے قانونی فیصلہ کے عین مطابق ہے،اور یہ اعلان کیا گیا کہ یہ گروہ دائرہ اسلام سے خارج ہے اور مسلمانوں کو تاکید کے ساتھ نصیحت کی جاتی ہے کہ اس گروہ کے ساتھ مذہبی معاملات نہ رکھیں۔
    http://allafrica.com/stories/201501262078.html

    [​IMG]
  2. ‏ فروری 12, 2015 #2
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    Gambia: Supreme Islamic Council States Position On Ahmadiya Jammat

    The Gambia Islamic Council has stated the Muslim Ummah's position on the Ahamadiya Jammat. The statement, aired by the state TV on Friday night, reads:

    The Gambia Supreme Islamic Council, being the sole body responsible for the general activities of all Islamic affairs in the country, based on the hadith of the Prophet Muhammd (peace be upon him) ("Addeenu-an-Naseeha") has said religion is an advice, and it is the council's obligation to clarify any misconception concerning the Islamic religion in The Gambia, based on evidence from authentic references.

    Therefore, the Council is hereby declaring to the general public, especially the Muslim Ummah in The Gambia on the position of the Muslim Ummah towards Qaduyanisim known as Ahmadiyaa Jamm'at.

    It is agreed by the entire pre-modern and modern Islamic scholars worldwide, including Pakistan the country of their origin, that Ahmadiyaa Jamm'at are not Muslims based on the following "dalils" (facts).

    Indeed, in spite of all what the Ahmadiyas use to quote from the Quran and Hadith, they built their beliefs on the following wrong pillars: They believe that Ghulam Ahmad is the Promised Messiah. They believe that Allah the Almighty does fast, pray, sleep, wake, write sign, make mistakes and have sex.

    The Qadianis believe that prophethood was not sealed by Prophet Muhammad (peace upon him), but is continuing and God sends messengers as necessary, and that Ghulam Ahmad is the best of all the prophets.

    They say there is no Quran except the one brought by the Promised Messiah and no hadith except in the light of his teachings and no prophet except under the masterhood of Ghulam Ahmad.

    They believe that every Muslim is Kaafir until he becomes a Qadiyani and, whoever gives a non-Qadiyani a wife or who marries a non Qadiyani woman is a kaafir.

    They believe that it is not allowed to pray behind a non-Ahmadis (Ahmadi); that is why they created lots of disunity in some remote villages in The Gambia.

    The position of the Muslims towards the Ahmadiya Jammat


    In 1953, the people of Pakistan demonstrated and demanded the resignation of Zafarulah Khan, the then Minister of Foreign Affairs, and considered the Qadiyani group a non-Muslim minority.

    The National Council of Pakistan (the Central Parliament) debated with the leader of the group, Mirza Nasir Ahmad. The parliament issued a decision and considered the Qadianis Ahmadist a non-Muslim minority.

    The Islamic Research Academy in Al-Azhar Shariff renewed its fatwa, legal opinion, that the followers of Ahmadiya are non-Muslims and confirmed that this doctrine has no relation with Islam.

    A general conference was held (in Makkah) at the headquarters of the Muslim World League in the month of Rabi 1 1494 AH corresponding to April 1974, and was attended by member states and representatives from the International Islamic Organizations from all over the world.

    The conference declared the Kufr disbelief of this group and that they are outside of the pale of Islam, and called on governments and Muslims to resist the danger they pose and not to deal with Ahmadiyas.

    Position of the Muslim scholars in The Gambia:

    They have made huge efforts to stand against this group and clarified that they are outside the pale of Islam, and that was since their appearance in the country in the 1950s.

    Amongst the scholars were the former Imam Ratib Imam Muhammad Lamin Bah of Banjul, Sheikh Khatab Bojang of Gunjur, Sheikh Karalang Kanteh of Seyfo, Sheikh Muhammad Lamin Federa of Kiang, Sheikh Umar Bun Jeng of Gunjur and Sheikh Jibril Mahdi Kujabi of Tallinding (may Allah have mercy on them) to name a few.

    Therefore, the Gambia Supreme Islamic Council is declaring that the Ahmadiya Jamaat is a non-Muslim group, which is in line with the legal opinion of the world scientific gatherings, which pronounced the group to be outside the pale of Islam and strongly recommended Muslims not to deal with them religiously.

    Your usual cooperation and understand is highly solicited.

اس صفحے کی تشہیر