1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

نماز اور زکوۃ عقیدئہ ختم نبوت کی فرع ہیں

محمدابوبکرصدیق نے 'آیات ختم نبوت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ نومبر 21, 2015

  1. ‏ نومبر 21, 2015 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    نماز اور زکوۃ عقیدئہ ختم نبوت کی فرع ہیں

    حضرت عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہما سے روایت ہے
    أَنَّ النَّبِیَّ ﷺ بَعَثَ مُعَاذً ا اِلَی الْیَمَنِ فَقَالَ ادْعُہُمْ اِلٰی شَہَادَۃِ أَن لَّااِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ وَأَنِّیْ رَسُوْلُ اللّٰہِ فَاِنْ ھُمْ أَطَاعُوْا لِذٰلِکَ فَأَعْلِمْہُمْ أَنَّ اللّٰہَ افْتَرَضَ عَلَیْہِمْ خَمْسَ صَلَوَاتٍ فِیْ کُلِّ یَوْمٍ وَلَیْلَۃٍ فَاِنْ ھُمْ أَطَاعُوْا لِذٰلِکَ فَأَعْلِمْہُمْ أَنَّ اللّٰہَ افْتَرَضَ عَلَیْہِمْ صَدَقَۃً فِیْ أَمْوَالِہِمْ تُؤْخَذُ مِنْ أَغْنِیَائِہِمْ وَتُرَدُّ فِیْ فُقَرَائِہِمْ

    (بخاری طبع کراچی ج۱ص۱۸۷)
    دوسری روایت میں یہ الفاظ ہیں
    اِنَّکَ تَأْتِیْ قَوْمًا أَھْلَ الْکِتَابِ فَادْعُہُمْ اِلٰی شَہَادَۃِ أَن لَّااِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ وَأَنَّ مُحَمَّدًا رَّسُوْلُ اللّٰہِ فَاِنْ ھُمْ أَطَاعُوْا لِذٰلِکَ فَأَعْلِمْہُمْ أَنَّ اللّٰہَ قَدْ فَرَضَ عَلَیْہِمْ خَمْسَ صَلٰوَاتٍ فِی الْیَوْمِ وَاللَّیْلَۃِ فَاِنْ ھُمْ أَطَاعُوْا لِذٰلِکَ فَأَعْلِمْہُمْ أَنَّ اللّٰہَ قَدْ فَرَضَ عَلَیْہِمْ صَدَقَۃً تُؤْخَذُ مِنْ أَغْنِیَائِہِمْ فَتُرَدُّ عَلٰی فُقَرَائِہِمْ فَاِنْ ھُمْ أَطَاعُوْا لِذٰلِکَ فَاِیَّاکَ وَکَرَائِمَ أَمْوَالِہِمْ وَاتَّقِ دَعْوَۃَ الْمَظْلُوْمِ فَاِنَّہٗ لَیْسَ بَیْنَہَا وَبَیْنَ اللّٰہِ حِجَابٌ متفق علیہ

    (مشکوۃ المصابیح ص۱۵۵)
    ترجمہ:’’ رسول اللہ ﷺ نے حضرت معاذ بن جبل رضی اللہ عنہ کو یمن کی طرف بھیجا تو آپ نے فرمایا تھا کہ تو اہل کتاب کی ایک قوم کی طرف جا رہا ہے ان کو دعوت دے کہ وہ لوگ لَااِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ وَأَنَّ مُحَمَّدٌ رَّسُوْلُ اللّٰہِ کی گواہی دیں اگروہ اس میں آپ کی اطاعت کرلیں( یعنی اللہ کی وحدانیت اور محمد ﷺکی رسالت کی گواہی دے دیں)تو ان کو بتا کہ اللہ نے ان پر پانچ نمازیں فرض کی ہیں اگر وہ اس میں تیری بات مان لیں توان کو بتا کہ اللہ نے ان پر ایک صدقہ فرض کیا ہے جو ان کے مالداروں سے لیا جائے گا اور ان کے غریبوں پر لوٹا دیاجائے گا پھر اگر وہ تیری اس میں اطاعت کرلیں تو ان کے عمدہ مالوں سے بچ اور مظلوم کی بد دعا سے بچ اس لئے کہ اس کے اور اللہ کے درمیان کوئی پردہ نہیں ہے‘‘۔
    دیکھا آپ نے نماز اورزکوۃ کی فرضیت ہی تب ہوتی ہے جب حضرت محمد ﷺ کی نبوت ورسالت کا اقرار کیا جائے کسی اور نبی کا یہاں بھی کوئی ذکر نہیں ،معلوم ہوا کہ جو نبی ﷺ کے بعد کسی اور کی نبوت کاقائل ہے اس سے نہ زکوۃ لی جائے گی نہ اس کو زکوۃ دی جائے گی۔ پھر نماز سے پہلے ایک مرتبہ کلمئہ اسلام کافی ہے جس کو پڑھ کر انسان اسلام میں داخل ہوتا ہے جبکہ زکوۃ کی فرضیت کے لئے یہ کلمہ کم از کم دو مرتبہ ضروری ہے ایک اسلام میں داخل ہوتے وقت دوسرے جب انسان نماز میں اس کو پڑھتا ہے کہتا ہے أَشْھَدُ أَن لَّا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ وَأَشْھَدُ أَنَّ مُحَمَّدًا عَبْدُہٗ وَرَسُوْلُہٗ کیونکہ اس حدیث پاک میںزکوۃ کی فرضیت بتانے سے قبل ان کے نماز ی ہونے کاذکر ہے کہ جب وہ نماز پڑھنے میں اطاعت کرلیں تو ان کو زکوۃ کی فرضیت کابتانا۔پھر اس حدیث میںیہ توبتایا کہ جب وہ زکوۃ دینے لگیں تو اونٹ وغیرہ کی زکوۃ میں درمیانے درجہ کا جانور لینا اعلیٰ لے کر ظلم نہ کرنا۔ مگر اس حدیث میں یہ نہ بتایا کہ فلاں موقعہ پر کوئی اور نبی بھی آئے گا اس کی بھی اطاعت کرنا۔الغرض یہ حدیث کئی وجہ سے ختم نبوت کی دلیل ہے ۔ لہذا زکوۃ نہ مرزائی سے لی جائے نہ اسے دی جائے اگرچہ وہ کتنا ہی غریب ہو۔ اگر ان کی کوئی تنظیم زکوۃ کی وصولی یا تقسیم کا کام کرے تو اس سے مسلمانوں کو مکمل بائیکاٹ ضروری ہے۔ مرزائی نہ مسجد بنائیں نہ ان کا مسلمانوں کی مسجد میں کوئی حق ہے

اس صفحے کی تشہیر