1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

قادیانی فرشتے

عبیداللہ لطیف نے 'قادیانیت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ جون 26, 2017

  1. ‏ جون 26, 2017 #1
    عبیداللہ لطیف

    عبیداللہ لطیف رکن ختم نبوت فورم

    رکنیت :
    ‏ مئی 19, 2016
    مراسلے :
    124
    موصول پسندیدگیاں :
    19
    نمبرات :
    18
    جنس :
    مذکر
    پیشہ :
    لیبر
    مقام سکونت :
    محلہ جمیل آباد شیخوپورہ روڈ فیصل آباد
    قادیانی فرشتے:۔
    (i)۔ ٹیچی ٹیچی:
    ’’( نشان (147ایک دفعہ مارچ 1905ء کے مہینے میں بوقت قلت آمدنی لنگرخانہ کے مصارف میں بہت دقت ہوئی کیوں کہ کثرت سے مہمانوں کی آمد تھی اوراس کے مقابل پر روپیہ کی آمدنی کم ،اس لیے دعا کی گئی۔ 5مارچ 1905ء کو میں نے دیکھ اکہ ایک شخص جو فرشتہ معلوم ہوتا تھا میرے سامنے آیا اور بہت سا روپیہ میرے دامن میں ڈال دیا۔ میں نے اس کا نام پوچھا ،اس نے کہا:نام کچھ نہیں ،میں نے کہا آخر کچھ تو نام ہوگا۔ اس نے کہا : میرا نام ہے : ٹیچی ٹیچی۔ ٹیچی ٹیچی پنجابی زبان میں و قت مقررہ کو کہتے ہیں یعنی عین ضرورت کے وقت پر آنے والا۔ تب میری آنکھ کھل گئی۔ بعد اس کے خدا تعالیٰ کی طرف سے کیا ڈاک کے ذریعے سے اور کیا براہ راست لوگوں کے ہاتھوں سے اس قدر مالی فتوحات ہوئیں جن کا وہم و گمان بھی نہ تھا اور کئی ہزار روپیہ آگیا۔‘‘
    (حقیقت الوحی صفحہ 346،مندرجہ روحانی خزائن جلد 22صفحہ 346)
    (ii)۔ خیراتی اور شیر علی:۔
    ’’من جملہ نشانات کے ،ایک نشان یہ ہے کہ تخمیناً پچیس برس کے قریب عرصہ گزر گیا ہے کہ میں گورداسپورہ میں تھا کہ مجھے خواب آئی کہ میں ایک جگہ چارپائی پر بیٹھا ہوں اور اسی چارپائی پر بائیں طرف میرے مولوی عبداﷲ صاحب مرحوم غزنوی بیٹھے ہیں ،جن کی اولاد اب امرتسر میں رہتی ہے۔اتنے میں میرے دل میں محض خدا تعالیٰ کی طرف سے ایک تحریک پیدا ہوئی کہ مولوی صاحب موصوف کو چارپائی سے نیچے اتاردوں۔ چنانچہ میں نے اپنی جگہ کو چھوڑ کر مولوی صاحب کی جگہ کی طرف رجوع کیا،یعنی جس حصہ چارپائی پر وہ بائیں طرف بیٹھے ہوئے تھے اس حصے میں میں نے بیٹھنا چاہا تب انھوں نے وہ جگہ چھوڑ دی اور وہاں سے کھسک کر پائنتی کی طرف چندانگلی کے فاصلے پر بیٹھے تب پھر میرے دل میں ڈالا گیا کہ اس جگہ سے بھی ان کو اٹھا دوں ۔ پھر میں ان کیطرف جھکا تو وہ اس جگہ کو بھی چھوڑ کر چند انگلی کی مقدار پر پیچھے ہٹ گئے۔ پھر میرے دل میں ڈالا گیا کہ اس جگہ سے بھی ان کو اور زیادہ پائنتی کی طرف کیا جائے ۔ تب پھر وہ چند انگلی پائنتی کی طرف کھسک کر ہو بیٹھے۔ القصہ میں ایسا ہی ان کی طرف کھسکتا گیا اور وہ پائنتی کی طرف کھسکتے گئے۔ یہاں تک کہ ان کو آخر کا ر چار پائی پر سے اترنا پڑا اور وہ زمین پر جو محض خاک تھی اور اس پر چٹائی وغیرہ کچھ بھی نہ تھی اتر کر بیٹھ گئے۔
    اتنے میں تین فرشتے آسمان سے آئے ۔ ایک کا نام خیراتی تھا ، وہ بھی ان پر زمین پر بیٹھ گئے اور میں چارپائی پر بیٹھا رہا۔۔۔۔۔۔ اور انہی دنوں میں شاید اس رات سے اول یا اس را ت کے بعد میں نے کشفی حالت میں دیکھا کہ ایک شخص جومجھے فرشتہ معلوم ہوتا ہے ،مگر خواب میں محسوس ہوا کہ اس کا نام شیرعلی ہے، اس نے مجھے ایک جگہ لٹا کر میری آنکھیں نکال لی ہیں اور صاف کی ہیں۔
    (تریاق القلوب صفحہ 224-225 ،مندرجہ روحانی خزائن جلد15صفحہ 352-351)
    (iii)۔ آئل:۔
    جَآءَ نِیْ آئِلٌ وَاخْتَارَ وَاَدَارَ اِصْبَعَہُ وَاَشَارَ یَعْصِمُکَ اللّٰہُ مِنَ الْعِدَا وََیَسْطُوْا بِکُلِّ مَنْ سَطَا۔ آئل جبرائیل ہے فرشتہ بشارت دینے والا۔
    ترجمہ: آیا میرے پاس آئل اور اس نے اختیار کیا(یعنی چن لیا تجھ کو) اور گھمایا اس نے اپنی انگلی کو اور اشارہ کیا کہ خدا تجھے دشمنوں سے بچاوے گا اور ٹوٹ کر پڑے گا اس شخص پر جو تجھ پر اچھلا۔ فرمایا آئل اصل میں ایالت سے ہے۔ یعنی اصلاح کرنے والا جو مظلوم کوظالم سے بچاتا ہے ۔ یہاں جبرائیل نہیں کہاآئل کہا اس لفظ کی حکمت یہی ہے کہ وہ دلالت کرے کہ مظلوم کو ظالموں سے بچاوے اس لیے فرشتہ کانام ہی آئل رکھ دیا۔ پھر اس نے انگلی ہلائی کہ چاروں طرف کے دشمن اور اشارہ کیا کہ یعصمک اﷲ من العداء وغیرہ۔
    یہ بھی اس سے پہلے الہام سے ملتا ہے : اِنَّہُ کَرِیْمٌ تَمَشّٰی اَمَامَک َوَعَادٰیوہ کریم ہے تیرے آگے آگے چلتا ہے جس نے تیری عداوت کی اس نے اس کی عداوت کی ۔ چونکہ آئل کا لفظ لغت میں نہ مل سکتا ہوگا یا زبان میں کم مستعمل ہوتا ہوگا اس لیے الہام نے خود ہی اس کی تفصیل کر دی ہے۔‘‘
    (بحوالہ تذکرہ صفحہ369طبع چہارم )
    (iv)۔ درشنی:۔
    ’’ایک فرشتہ کو میں نے 20برس کے نوجوان کی شکل میں دیکھا ، صورت اس کی مثل انگریزوں کے تھی اور میز کرسی لگائے ہوئے بیٹھا ہے۔ میں نے اس سے کہا کہ آپ بہت ہی خوب صورت ہیں۔ اس نے کہا: ہاں میں درشنی آدمی ہوں۔‘‘
    (ملفوظات مرزا قادیانی جلد چہارم صفحہ 69)
    (v)حفیظ:۔
    صوفی نبی بخش صاحب لاہوری نے بیان کیا کہ حضرت مسیح موعود نے فرمایا:
    ’’ بڑے مرزا صاحب پر ایک مقدمہ تھا۔ میں نے دعا کی تو ایک فرشتہ مجھے خواب میں ملا جو چھوٹے لڑکے کی شکل میں تھا۔ میں نے پوچھا تمھارا کیا نام ہے۔ وہ کہنے لگا ، میرا نام حفیظ ہے۔ پھر وہ مقدمہ رفع دفع ہو گیا۔‘‘
    (تذکرہ مجموعہ وحی و الہامات صفحہ 643طبع چہارم)
    (vi)۔ مٹھن لال:۔
    ’’فرمایا : نصف رات سے فجر تک مولوی عبدالکریم کے لیے دعاکی گئی ۔ صبح (کی نماز) کے بعد جب سویا تو یہ خواب آئی۔۔۔۔۔۔میں نے دیکھا کہ عبداﷲ سنوری میرے پاس آیا ہے اور وہ ایک کاغذ پیش کرکے کہتا ہے کہ اس کاغذ پر میں نے حاکم سے دستخط کرانا ہے اور جلدی جانا ہے ۔ میری عورت سخت بیمار ہے اور کوئی مجھے پوچھتا نہیں۔ دستخط نہیں ہوتے۔ اس وقت میں نے عبداﷲ کے چہرے کی طرف دیکھا تو زرد رنگ اور سخت گھبراہٹ اس کے چہرہ پر ٹپک رہی ہے۔ میں نے اس سے کہا کہ یہ لوگ روکھے ہوتے ہیں ،نہ کسی کی سفارش مانیں اور نہ کسی کی شفاعت میں تیرا کاغذ لے جاتا ہوں۔ آگے جب کاغذ لے کر گیا تو کیا دیکھتا ہوں کہ ایک شخص مٹھن لال نام جو کسی زمانہ میں بٹالہ میں اکسٹرا اسسٹنٹ تھا، کرسی پر بیٹھا ہو اکچھ کام کر رہا ہے اور گرد اس کے عملہ کے لوگ ہیں ۔ میں نے جا کر کاغذ اس کو دیا ور کہا کہ یہ ایک میرا دوست ہے اور پرانا دوست ہے اور واقف ہے۔ اس پر دستخط کر دو۔اس نے بلا تامل اسی وقت لے کر دستخط کر دیے۔ پھر میں نے واپس آ کر وہ کاغذ ایک شخص کو دیا اور کہا خبردار ہوش سے پکڑو ابھی دستخط کیے گئے ہیں اور پوچھا کہ عبداﷲ کہاں ہے۔ انھوں نے کہا کہیں باہر گیا ہے۔ بعد اس کے آنکھ کھل گئی اور ساتھ پھر غنودگی کی حالت ہو گئی۔ تب میں نے دیکھا کہ اس وقت میں کہتا ہوں، مقبول کو بلاؤ اس کے کاغذ پر دستخط ہو گئے ہیں۔‘‘
    یہ جو مٹھن لال دیکھا گیا ہے ملائک طرح طرح کے تمثلات اختیار کر لیا کرتے ہیں۔ مٹھن لال سے مراد ایک فرشتہ تھا۔‘‘
    (تذکرہ طبع چہارم صفحہ 474-473 از مرزا قادیانی)
    • Like Like x 1
  2. ‏ مئی 18, 2019 #2
    محمد اورنگ زیب رضوی

    محمد اورنگ زیب رضوی رکن ختم نبوت فورم

    رکنیت :
    ‏ دسمبر 26, 2017
    مراسلے :
    14
    موصول پسندیدگیاں :
    2
    نمبرات :
    3
    جنس :
    مذکر
    سوال: کیا آپ مرزا قادیانی کے فرشتوں کے نام بتاسکتے ہیں؟

    جواب: مرزا قادیانی کی بےہودہ ذات و صفات کی طرح اس کے نام نہاد فرشتوں کے نام بھی عجیب و غریب تھے قادیانی لٹریچر میں فرشتوں کے جو نام بیان ہوۓ ہیں وہ اس طرح ہیں1 ٹیچی ٹیچی 2 درشنی 3 خیراتی 4 مٹھن لال 5 شیر علی 6 حفیظ 7 ہمدرد فرشتہ 8 رانی 9 انگریزی فرشتہ 10 میٹھی روٹیوں والے فرشتے

    (سیرت المہدی حصہ سوم صفحہ ٢٦٣ از مرزا بشیر احمد قادیانی)


    مصنف
    محمد اورنگزیب رضوی

اس صفحے کی تشہیر