1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

(باہمی فتوؤں کی پوزیشن)

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ دسمبر 2, 2014

  1. ‏ دسمبر 2, 2014 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (باہمی فتوؤں کی پوزیشن)
    جناب یحییٰ بختیار: اب مرزاصاحب!میں کچھ عرض کروںگا۔ بیشتر اس کے کہ آپ ایک بات کا جواب دیں۔ آپ مہربانی کرکے میری عرض سن لیجئے۔ جو آپ نے ابھی…اس کے بعد پھر آپ جو فرمائیںگے۔
    پہلا تو میں یہ عرض کرناہے کہ جوآپ نے فتاویٰ پڑھے۔ وہ ایک دوسرے کو مختلف طبقے، فرقے کہہ رہے ہیں کہ یہ کافر ہیں۔ وہ کافر ہیں۔ اب یہ ہمارے عقیدے کی بات ہے یا سمجھ کی بات ہے کہ اگر ہم کہیں کہ فلانا آدمی کافر ہے۔ وہ کافر جو ہم کہتے ہیں کہ ملت اسلامیہ سے باہر ہے، یا وہ کافر سمجھیں جیسے ہندو ہے۔ اگر ایک ہندو سے مسلمان شادی کرتا ہے، تو اس کی جو اولاد ہو گی۔ ہم کہتے ہیں کہ یہ حرام کی اولاد ہے۔ یہ شادی نہیں یہ زنا ہے۔ اس قسم کے فتوے انہوں نے ایک748 دوسرے کو کافر بنا کے دیئے ہیں۔ یہ ایک ان کا Description ہے جو کہ Legal description ہم کہہ سکتے ہیں کہ اگر ایک ناجائز شادی ہو، جو شادی نہ ہو قانون کے مطابق، تو اولاد جو ہے وہ حرام ہوگی اوران کی وراثت میں کوئی حق نہیں ملے گا۔ یہ ایک دوسرے کو کافر کہہ کے اس قسم کے فتوے دے رہے ہیں۔ یہ میں سمجھتاہوں کہ گالیوں اورتوہین کی بات نہیں ہوتی۔ Describe کرتے ہیں کہ
    What are going to be the consequences, as a result of this sort of marriage. (اس قسم کی شادی کے کیا اثرات ہوسکتے ہیں)
    اور یہ وہ اس لئے میں یہ سمجھوں گا کہ قطع نظر اس سے کہ بیک گراؤنڈ کیساہے۔ جو آپ بتا رہے ہیں کہ گالیاں دیا کرتے تھے۔ اس کی کوئی Relevancy نہیںہے۔
    مرزاناصر احمد: جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: باقی میں نے یہ عرض کرناتھا کہ غزنویوں کی طرف سے جو چیز ہوئی مرزاصاحب پر، اس کا بھی کوئی Relevence نہیں ہے کیونکہ کسی غزنوی کا میں نے آپ کو حوالہ نہیں پڑھ کے سنایا کہ انہوں کے متعلق مرزاصاحب نے کیوں یہ بات کہی یا کہی یا نہیں کہی۔ صرف تین شخصیتیں جو تھیں، ان کاتھا۔ آپ نے جواب ضرور دیا اور Explain آپ نے کیا ہے۔ میں ذرا پھر آپ کی توجہ ان حوالوں کی طرف دلاؤں گا۔
    آپ نے حضرت پیر مہر علی شاہ صاحب گولڑہ کے متعلق کہا کہ انہوں نے مرزا صاحب کے متعلق کوئی بات کہی اور انہوں نے ان کو ’’ملعون‘‘ کہا اور ملعون کا یہ مطلب ہوتاہے کہ اﷲ کے سپرد کرکے،اﷲہی اس پرلعنت بھیجے گا۔ پھرآپ نے رشیداحمدگنگوہی صاحب کے متعلق کہاکہ انہوں نے مرزاصاحب کی شان میں کچھ ایسے فقرے کہے کہ جس کے جواب میں…کہ انہوں نے ’’ابن مریم کا ان سے کوئی تعلق نہیں، دجال ہے۔‘‘یہ ہے۔ اس کے جواب میں مرزاصاحب نے کہاکہ ’’اندھا،شیطان، دیو، گمراہ۔‘‘ اب میں صرف آپ سے عرض…’’ملعون،سفیہ، ملعون، من المسفدین‘‘ وغیرہ لکھا ان کے متعلق…
    مرزاناصر احمد: یہ جو آپ نے کل دو شعر پڑھے تھے…اچھاجی،اچھا… رشید گنگوہی کے بارے میں…
    749جناب یحییٰ بختیار: رشید…
    مرزاناصر احمد: ہاں،ہاں…اچھا،ٹھیک ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: تومیں نے کہا کہ اس کے متعلق یہ الفاظ ہیں تاکہ آپ کو پھر یاد آ جائیں۔ شایدآپ نے نوٹ نہ کئے ہوں۔
    مرزاناصر احمد: نہیں،وہ ٹھیک ہے۔ ابھی یہاں مل جاتاہے۔ یہ میرے سامنے ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،’’اندھا شیطان، دیو،گمراہ، سفیہ، ملعون، من المفسدین‘‘ تو یہ میں صرف اس واسطے آپ سے…ابھی تک تو میں اپنا سوال تو پورا نہیں کر سکا ہوں۔ میں صرف بیان کر رہاہوں کہ ’’اندھا شیطان، دیو۔‘‘یہ الفاظ ’’گمراہ‘‘ یہ جو ہیں۔ یہ سارے عربی کے معانی میں استعمال ہوتے ہیں یا اردو کے معنی ہیں؟ کیونکہ یہ سارے الفاظ جو میں دیکھ رہا ہوں،میرے سامنے اردو میں ہیں۔ بعض مرزاصاحب عربی میں باتیں کی ہیں جن کاترجمہ ہواہے۔
    مرزاناصر احمد: ویسے یہ سارے جو ہیں وہ عربی میں ہیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں۔ تو اسی واسطے میںکہتاہوں… پھرآگے مولوی سعد اﷲ کا نام لے کر مرزاصاحب نے کہا ہے…جن کے متعلق آپ نے نظم سنائی جو کہ آپ کہہ رہے ہیں کہ علامہ اقبال کی ہے… ان کے بارے میں مرزاصاحب نے نام لے کرکہا ہے ’’مکار عورت کا بیٹا۔‘‘…
    مرزاناصر احمد: نہیں کہا۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ نہیں؟ میں اسی واسطے آپ سے وہ کررہاہوں۔
    مرزاناصر احمد: ہاں، نہیں کہا۔میں…
    جناب یحییٰ بختیار: یعنی یہ لفظ نہیں ہے وہاں؟
    مرزاناصر احمد: نہیں،بالکل نہیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: کیالفظ استعمال کئے گئے ہیں؟
    مرزاناصر احمد: ’’سرکش…‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،…
    750مرزاناصر احمد: ’’…ابن بغایا۔‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: یا ’’ابن بغیٰ‘‘’’ اگر تو اے نسل بدکاران…‘‘(انجام آتھم ص۲۸۲ ، خزائن ج۱ص۲۸۲)یہاںایسا ترجمہ آپ کی کتاب میں ہے۔
    مرزاناصر احمد: ہاں، کتاب میں ہے۔ لیکن یہ بانی سلسلہ کا نہیں ہے ترجمہ۔
    جناب یحییٰ بختیار: آپ کی جماعت سے جو کتاب پبلش ہوئی ہے…
    مرزاناصر احمد: معلوم ہوتاہے ترجمہ کرنے والے کو اس وقت عربی کے معانی نہیں آتے تھے۱؎۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،یعنی آپ کی یا ’’انجام آتھم‘‘ کی جو کتاب پبلش ہوئی، آپ کی ہی طرف سے شائع ہوئی ہے…
    مرزاناصر احمد: ہاں، ہاں۔
    جناب یحییٰ بختیار: …اور کئی سال سے چلتی آرہی ہے۔
    مرزاناصر احمد: نہیں، میں تو تسلیم کرتاہوں۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،میں اسی واسطے کہہ رہاہوں کہ اگر یہ کتاب غلط ہے۔ آپ کی نہیں،تواس واسطے…
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ مرزاناصر کہہ رہا ہے کہ ایک صدی سے مرزا کی کتاب جو قادیانی جماعت شائع کر رہی ہے، اس کا ترجمہ غلط ہے۔ ایک جھوٹ کو سچ ثابت کرنے کے لئے مرزاناصر کتنے جھوٹ بول رہا ہے؟
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    مرزاناصر احمد: نہیں،نہیں،نہیں، میں تسلیم کرتاہوں کہ ہماری کتاب ہے اورترجمہ بھی ہماراہی ہے۔ لیکن وہ غلط ترجمہ ہے’’ابن بغیٰ‘‘کا۔
    جناب یحییٰ بختیار: ’’بغیی‘‘کا باقی جگہ بھی جو ترجمہ ہواہے۔مرزابشیر الدین محمود صاحب کا، یہ میں آپ کوبھیج رہاہوں۔ ’’تفسیر کبیر سورہ مریم آیت نمبر۲۹ ج۵ ص۱۹۲ ؍اپریل ۱۹۸۶ء جدیدایڈیشن‘‘ اس میں بھی یہ ’’بغیہ‘‘ کا کہ ’’اور ماں بھی بدکار نہیں تھی۔‘‘ پھر آگے یہ ہے صفحہ ۱۶۸۔ پھر ایک جگہ آتاہے :’’اور تیری ماں بھی بدکار نہ تھی۔‘‘ وہ ’’بغیی‘‘ ’’اورتیری ماں بھی بدکار نہیں تھی۔‘‘یہ بھی آپ دیکھ لیں۱؎۔
    مرزاناصر احمد: نہیں،نہیں،وہ تودیکھ لیا۔ اصل میں عربی کے ہیں یہ الفاظ اور اس میں کوئی دقت نہیں۔ یہاں جو زیربحث ہے وہ ’’بغیہ‘‘نہیں ہے…
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،مطلب ہے…
    مرزاناصر احمد: میری بات سنیں…’’ابن بغیٰ‘‘ ہے اور’’ابن بغیٰ‘‘ کے معنی جو ہیں وہ ’’سرکش‘‘ کے ہیں۔
    751جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!میں نے ابھی تک سوال پورا نہیںکیا۔ میں عرض کر رہاہوںکہ ایک جگہ ’’ابن بغیٰ‘‘ کے بھی یہ الفاظ استعمال ہوئے ہیں۔’’بدکار عورت‘‘ کے ’’بدکار‘‘ اور پھر دوسری جگہ صرف’’بغیٰ‘‘ کے،یہ ’’بدکار‘‘۔ میں اس واسطے آپ کو توجہ دلارہاہوں۔
    مرزاناصر احمد: ’’بغیٰ‘‘ کے معنی’’بدکار‘‘ عربی لفظ میں کوئی نہیں ہے۔ یہ آپ کسی سے یہاں پوچھ لیں۔ وہ آپ کو بتادے گاکہ ’’بغیٰ‘‘جو ہے وہ فعل ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ آپ دیکھ لیجئے۔کہیں تو’’میں کبھی بدکاری میں مبتلا نہیں ہوئی۔‘‘…
    مرزاناصر احمد: وہاں ’’بغیٰ‘‘ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: خیر،یہ آپ دیکھ لیں۔ اس پرپھرآپ بعد میں…
    مرزاناصر احمد: نہیں،وہاں یہ لفظ ہی نہیں۔وہاں لفظ ہی دوسرا ہے۔(اپنے وفد کے ایک رکن سے) قرآن کریم نکالو جی۔ یہ لو۔ نکالو۔ ادھرلائیں جی میرے پاس۔
    جناب یحییٰ بختیار: مفتی صاحب!آپ سے توجہ ایک منٹ کے لئے دلائیں گے کیونکہ…
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ اسی طرح مرزامحمود نے سورہ مریم کی آیت ہذا کاتفسیر صغیر ص۳۸۳ پر ترجمہ ’’تیری ماں بدکار نہ تھی‘‘کیاہے۔
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    مولوی مفتی محمود: قرآن کریم میں ہے: ’’ولاتکرھوا فتیاتکم علی البغائ‘‘(سورہ نور:۳۳) یہاں ’’بغیٰ‘‘کے معنی کیاہیں؟

اس صفحے کی تشہیر