1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

(اگر محمدی بیگم سے نکاح اﷲ کی مرضی تھی تو پھر اتنی کوششیں کیوں؟)

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ جنوری 16, 2015

  1. ‏ جنوری 16, 2015 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (اگر محمدی بیگم سے نکاح اﷲ کی مرضی تھی تو پھر اتنی کوششیں کیوں؟)
    جناب یحییٰ بختیار: ۔۔۔۔۔۔تو سوال یہ تھا کہ اگر اللہ کی مرضی تھی تو اتنی زیادہ کوشش کی پھر اِنسانی 1384ضرورت نہیں تھی کہ لوگوں کو کہیں کہ: ’’میں ایسے کردوں گا، میری پیشین گوئی پوری ہو۔‘‘ یہ جو ہے ناں مطلب، یہ۔۔۔۔۔۔۔
    مرزا ناصر احمد: ہاں، ہاں، اس کا جب جواب آئے گا، پتا لگ جائے گا کہ محمدی بیگم والی پیشین گوئی پوری ہوگئی اور اس کا خاندان احمدی ہوگیا۱؎…
    جناب یحییٰ بختیار: احمدی تو ہوجاتے ہیں جی، وہ تو اور بات ہے ناںجی، وہ خاندان…
    مرزا ناصر احمد: ۔۔۔۔۔۔ یہ کہہ کے۔۔۔۔۔۔
    جناب یحییٰ بختیار: اپنے مرزا صاحب کے بیٹے احمدی نہیں ہو رہے تو اس کا تو یہ تو کوئی بات ہی نہیں ہے۔
    مرزا ناصر احمد: کون؟ مثلاً مرزا سلطان احمد صاحب احمدی نہیں ہوئے؟
    جناب یحییٰ بختیار: یہی میرا خیال تھا، آپ نے کہا بھی تھا کہ اُس دن کہ احمدی نہیں ہوئے۔ ان کا جنازہ بھی نہیں پڑھا انہوں نے۔
    مرزا ناصر احمد: وہ چھوٹے بیٹے تھے، فوت ہوگئے تھے۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، یعنی جو بھی ہو، کوئی بیٹا بھی ہو۔
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

    ۱؎ سارے احمدی ہوگئے؟ کذب محض! مگر محمدی بیگم مرزا کے نکاح میں نہ آئی، نہ سلطان مرا، نہ بیوہ ہوئی، نہ طلاق ملی، نہ مرزا قادیانی کے گھر آباد ہوئی، لیکن پیشین گوئی پوری ہوگئی۔۔۔؟ یا بے حیائی تیرا آسرا۔۔۔!
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    مرزا ناصر احمد: یہ مرزا سلطان احمد صاحب، جن کا آپ نے ذِکر کیا ہے، یہ احمدی ہوگئے تھے۔
    جناب یحییٰ بختیار: اس کے باوجود بات نہیں مانی انہوں نے۔
    مرزا ناصر احمد: نہیں، نہیں، بعد میں احمدی ہوگئے تھے۔
    جناب یحییٰ بختیار: بعد میں؟
    مرزا ناصر احمد: سمجھ کے کہ پیش گوئی سچ نکلی ہے۔۔۔۔۔۔
    جناب یحییٰ بختیار: ’’ہائے اس زودِ پشیماں کا پشیماں ہونا!‘‘
    1385مرزا ناصر احمد: ہاں، ہاں، بالکل۔
    جناب یحییٰ بختیار: شادی ہوگئی، محمدی بیگم چلی گئی، پھر کیا فائدہ؟
    مرزا ناصر احمد: (قہقہہ) نہیں، پھر وہ میں ۔۔۔۔۔۔ مزاح کا پہلو اس میں کوئی نہیں، حقیقت دیکھنی چاہئے۱؎۔
    Mr. Chairman: I will request the honourabale members to restain their sentiments.
    (جناب چیئرمین: اراکین سے درخواست کروں گا کہ وہ اپنے جذبات پر قابو رکھیں)
    Mr. Yahya Bakhtiar: Sir, shall we have a five minutes, break?
    (جناب یحییٰ بختیار: جنابِ والا! کیا ہم پانچ منٹ وقفہ کرلیں؟)
    Mr. Chairman: All right, ten minutes, break.
    (جناب چیئرمین: ٹھیک ہے دس منٹ وقفہ کرلیں)
    The Delegation is to report back at quarter to one.
    (وفد پونے ایک بجے واپس آجائے)
    Ten minutes for honourable members.
    (دس منٹ معزز اراکین کے لئے)
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

    ۱؎ حقیقت یہی ہے نا کہ محمدی بیگم مرزا کے نکاح میں نہ آئی، حالانکہ مرزا نے پیش گوئی کی تھی کہ ’’ہر رُکاوٹ دُور کرکے اللہ تعالیٰ اسے میری طرف لائے گا‘‘ وہ تو درکنار اس کا ایک بال بھی مرزا کو نہ ملا۔۔۔!
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    The Committee is adjourned for 10 minutes.
    (کمیٹی دس منٹ کے لئے ملتوی ہوتی ہے)
    (The Delegation left the Chamber)
    (وفد ہال سے باہر چلا گیا)
    ----------
    (The Special Committee adjourned for ten minutes to re-assemble at 12:45 p.m.)
    (خصوصی کمیٹی کا اِجلاس ۱۰منٹ کے لئے ملتوی ہوتا ہے، ۴۵:۱۲ پر دوبارہ ہوگا)
    ----------
    (The special Committee re-assembled after the break, the Chairman (Sahibzada Farooq Ali) in the chair.)
    (خصوصی کمیٹی کا اِجلاس وقفے کے بعد دوبارہ شروع ہوا، اور چیئرمین صاحبزادہ فاروق علی نے صدارت کی)
    ----------
    Mr. Chairman: The Delegation may be called.
    (جناب چیئرمین: وفد کو بلالیں)
    (Interruptions)
    (مداخلت)
    I will request the honourable members if anything comes from the mouth of the witness which is appreciated or which is disapproved. We should not make gestures.
    (میں معزز اراکین سے درخواست کروں گا کہ اگر گواہ کوئی ایسی بات کریں جو پسندیدہ یا ناپسندیدہ ہو تو ہمیں اپنے چہرے وغیرہ کے اشاروں سے اس کا اظہار نہیں کرنا چاہئے)
    1386ہاں! بالکل، بلا لیں جی۔
    (The Delegation entered the Chamber)
    (وفد ہال میں داخل ہوا)
    Mr. Chairman: Yes. Mr. Attorney-General.
    (جناب چیئرمین: جی اٹارنی جنرل صاحب!)
    آپ تشریف رکھیں۔
    Mr. Yahya Bakhtiar: Sir, the other day. I had referred to certain extractsform "Al-Fazal" relating to Akhand Bharat, and now I am giving those dates to Mirza Sahib almost to start ...... becaues I may have given "1947", I may have mentioned "1957" or something, but these are the correct dates:-
    April 5, 1947.......

اس صفحے کی تشہیر