1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

(امکان اور ایمان میں فرق، مرزاناصر کا نیا فلسفہ)

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ دسمبر 1, 2014

  1. ‏ دسمبر 1, 2014 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (امکان اور ایمان میں فرق، مرزاناصر کا نیا فلسفہ)
    مرزاناصر احمد: یہ…اس کا جواب یہ ہے کہ ایک ہے امکان’’آسکتا ہے یا نہیں آسکتا‘‘ ایک یہ ہے ایمان کہ ’’ایک آگیا۔‘‘جہاں تک ’’آسکتے ہیں‘‘کا سوال ہے،میں یہ بتا رہا ہوں کہ جو حوالے آپ نے پڑھے ہیں وہاں امکان کے متعلق ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ حوالے درست تو ہیں ناں جی؟
    651مرزاناصر احمد: حوالے درست ہیں۔ لیکن اس میں امکان کاذکر ہے۔جیسا کہ ’’تقویت الایمان‘‘ میں…
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، میں آپ سے یہ عرض کروں گا پھر جی کہ اس طرح آپ کہیں کہ کیا مرزابشیرالدین محمود صاحب کو رسول اﷲa کی بشارت کا علم تھا یا نہیںتھا؟ان کو اس بات کا علم تھا کہ انہوں نے کیا بشارت کی ہے کہ ایک ہی مسیح موعود آئیںگے؟
    مرزاناصر احمد: ان کو…انہوں نے یہ کہا ہے کہ اس کا امکان خداتعالیٰ کی…
    جناب یحییٰ بختیار: اس کا امکان ہی نہیںہوسکتا جب وہ بشارت کا علم ہو،میں عرض کر رہاہوں،آپ یہ Explain (واضح) کریں۔
    مرزاناصر احمد: نہیں،نہیں، امکانی بحث میں ہے وہ۔ اچھا،اب سمجھ گیا۔ اب میں سمجھ گیا۔ میرے نزدیک امکان کی بحث…
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،نہیں، وہ ’’امکان ‘‘نہیں کہہ رہے…’’آئیںگے‘‘
    مرزاناصر احمد: وہ بھی امکانی آنا ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،وہ نہیں کہتے ’’آسکتے ہیں‘‘…’’آئیںگے‘‘… آپ ذراغور سے دیکھ لیں اس پر’’آئیںگے۔‘‘
    مرزاناصر احمد: آپ نے، آپ نے، آپ نے…انکوائری کمیٹی، جو منیر کمیٹی ہے۔ اس میں بھی یہ سوال کیاگیاتھا اوراس میں وہاں یہی کہا ہے کہ ’’میری مرادامکان کی ہے‘‘ ایک شخص خود…
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، وہ تو Interpretation (مفہوم)ہے۔ یہاں میں جو آپ سے پوچھ رہا ہوں …
    مرزاناصر احمد: نہیں، Interpretation (مفہوم)خود Author کی، تو دو، دو Interpretation (مفہوم)ہوگئیں۔ ایک لکھنے والے کیInterpretation (مفہوم) کہ ’’میں امکان کے متعلق با652ت کررہاہوں‘‘اور آج ایک میری Interpretation (وضاحت) کہ انہوں نے درست کہاتھا کہ ’’امکان کے متعلق بات کر رہاہوں‘‘…
    جناب یحییٰ بختیار: دیکھیں،مرزاصاحب!…
    مرزاناصر احمد: اور’’امکان‘‘ کے متعلق،اگر مجھے اجازت ہو؟…
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں،آپ پورا کرلیں پھر میں…
    مرزاناصر احمد: اگر’’امکان‘‘ کے متعلق جب بحث ہو تو یہ ’’تقویت الایمان‘‘ حضرت مولانا محمداسماعیل صاحب شہید کی صفحہ۳۷ کے اوپرلکھا ہے: ’’اس شہنشاہ خداتعالیٰ کی تویہ شان ہے کہ ایک آن میں ایک حکم ’’کن‘‘ سے چاہے تو کروڑوں نبی اورولی اورجن اورفرشہ جبرائیل اورمحمدﷺ کے برابرپیداکرڈالے۔‘‘
    اب یہ بالکل ان کا،یہ ایمان رکھنے کے باوجود کہ آنحضرتa خاتم النّبیین ہیں اورآپ جیسااورکوئی نہیں آسکتا۔ اس ایمان کے باوجود امکان کی بات کر رہے ہیں۔
    Mr. Chairman: Yes, Attorney- General.
    (جناب چیئرمین: جی ہاں! اٹارنی جنرل)
    Mr. Yahya Bakhtiar: Shall I proceed?
    Mr. Chairman: Yes. (جناب چیئرمین: جی ہاں!)
    جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!میںپھر یہ عرض کرتاہوں کہ میرے نزدیک سوال بالکل سادہ ہے۔’’ختم نبوت‘‘ کے معنی کیاہیں؟ جو ہمارے سب مسلمانوں کا عقیدہ ہے۔اس عقیدے میں جو قرآن کی روشنی میں ابھی تک اﷲ تعالیٰ کا کوئی اورفرمان نہیں آیا کہ ’’میں ابھی نیا آدمی بھیجتاہوں‘‘ میں نبی بھیجتاہوں، میں نئی شرع بھیجتاہوں۔‘‘
    اﷲ تعالیٰ تو سب کچھ کر سکتاہے۔ امکان کی بات میں نہیں کرتا۔ جو اس وقت اﷲتعالیٰ کا حکم ہما653رے سامنے ہے۔ ان کی کتاب ہمارے سامنے ہے۔ اس کی تفسیر کا سوال ہے۔دو نقطہ ہائے نظر پیش کئے گئے۔ ایک نقطہ نظر یہ ہے کہ اورنبی نہیں آسکتے۔’’خاتم النّبیین‘‘ کا یہ مطلب ہے۔ دوسرا مطلب یہ لیا جاتا ہے کہ نہیں اور نبی آسکتے ہیں۔پھر اس کے بعد دوسرا سوال یہ میں نے پوچھا کہ اورنبی آسکتے ہیں تو کتنے آئیںگے؟ آپ نے کہا کہ بشارت آنحضرتﷺ کی یہ ہے کہ مسیح موعود آئیںگے اوروہ آچکے ہیں۔ اس پرآپ کا عقیدہ یہ کہ اورنہیں آئیںگے اسی Context (ضمن) میں میں نے یہ عرض کیاکہ بشارت کا مرزابشیرالدین محمود صاحب کو بھی علم ہوگا۔ یہ یقینا ایسی بات تو نہیں ہے کہ آپ کو علم ہو، ان کو نہ ہو۔ اس کے باوجود یہ کہتے ہیں کہ’’اورنبی آئیںگے‘‘ اور میں الفاظ پھر پڑھ کے دیتاہوں آپ کو…
    مرزاناصر احمد: نہیں، وہ تو واضح ہے، واضح ہے۔

اس صفحے کی تشہیر