1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

ختم نبوت فورم[Khatmenbuwat Forum]

لوڈ ہو رہا ہے ...
اپریل
01
by مبشر شاہ at ‏6:31 شام
(45 مناظر / 0 پسندیدگیاں )
1 تبصرے
ضعیف احادیث پر عمل کرنا
سوال

صحاحِ ستہ میں بعض ضعیف احادیث بھی ہیں، ان پر عمل کرنا کیسا ہے؟

جواب

اگر کسی حدیث کو ایک محدث یا بعض محدثین ضعیف قرار دیں، لیکن دوسرا محدث یا کئی محدثین اس کی تصحیح کریں یا اسے عملاً قبول کرلیں، یا کسی حدیث کو بعد کے محدثین تو ضعیف قرار دیں (مثلاً بعد کے کسی راوی کے ضعف کی وجہ سے) لیکن امامِ مجتہد...
اگست
21
by عبیداللہ لطیف at ‏9:16 صبح
(3,653 مناظر / 3 پسندیدگیاں )
9 تبصرے
عنوان :_ " علماء آسمان کے نیچے بدترین مخلوق "روایت کی تحقیق

منقول از فیسبک
مرزائی مربیوں کی طرف سے علماء اسلام کو بدنام کرنے کے لئے پیش کی جانے والی ایک روایت کی حقیقت

مرزائی دھوکے با ز اکثر ایک روایت پیش کرتے ہیں کہ " ایک زمانہ آئے گا کہ امت اسلامیہ کہ علماء آسمان کے نیچے بدتریں مخلوق ہونگے " اور حوالہ دیا جاتا ہے " مشکاۃ المصابیح " کا لیکن کوئی مرزائی مربی اس حدیث کی پوری سند نہیں بیان کرے گا ، یہ روایت مشکاۃ میں امام بیہقی کی کتاب " شعب الایمان " کے حوالے سے ہے ، آئیے دیکھتے ہیں امام بیہقی نے اس کی سند کیا ذکر کی ہے ۔
أَخْبَرَنَا أَبُو الْحَسَنِ عَلِيُّ بْنُ أَحْمَدَ بْنِ عَبْدَانَ،...
مارچ
22
by مظفراکبروانی سلفی at ‏11:53 شام
(1,955 مناظر / 1 پسندیدگیاں )
0 تبصرے
ﯾﮑﻮﻥ ﻓﯽ ﺍﻣﺘﯽ ﺭﺟﻞ ﯾﻘﺎﻝ ﻟﮧ ﻣﺤﻤﺪ ﺑﻦ ﺍﺩﺭﯾﺲ
ﺍﺿﺮ ﻋﻠﯽ ﺍﻣﺘﯽ ﻣﻦ ﺍﺑﻠﯿﺲ ﻭﯾﮑﻮﻥ ﻓﯽ ﺍﻣﺘﯽ

ﺭﺟﻞ ﯾﻘﺎﻝ ﻟﮧ ﺍﺑﻮ ﺣﻨﯿﻔﮧ ﮬﻮ ﺳﺮﺍﺝ ﺍﻣﺘﯽ .

ﺗﺮﺟﻤﮧ :ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﺍﯾﮏ ﺁﺩﻣﯽ ﮨﻮﮔﺎ ﺟﺲ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ
ﻣﺤﻤﺪ ﺑﻦ ﺍﺩﺭﯾﺲ ‏(ﺷﺎﻓﻌﯽ ‏) ﮨﻮﮔﺎ , ﻭﮦ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ
ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺍﺑﻠﯿﺲ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻧﻘﺼﺎﻥ ﺩﮦ ﮨﻮﮔﺎ -
ﺍﻭﺭ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﺁﺩﻣﯽ ﺍﺑﻮ ﺣﻨﯿﻔﮧ ﻧﺎﻣﯽ
ﮨﻮﮔﺎ , ﻭﮦ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻣﺖ ﮐﺎ ﭼﺮﺍﻍ ﮨﻮﮔﺎ .
ﻣﻮﺿﻮﻉ
‏(ﻣﻨﮕﮍﺕ ‏): ﺍﻣﺎﻡ ﺍﺑﻦ ﺟﻮﺯﯼ ﻧﮯ ﺍﺳﮯ ﻣﻮﺿﻮﻋﺎﺕ
ﻣﯿﮟ ﺫﮐﺮ ﮐﯿﺎ ﮨﮯ ‏(ﺍﻟﻤﻮﺿﻮﻋﺎﺕ 43/1‏) .
ﺍﻣﺎﻡﺳﯿﻮﻃﯽ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﯿﺎ ﮐﮧ ﯾﮧ ﺭﻭﺍﯾﺖ ﻣﻮﺿﻮﻉ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ
ﺍﺳﮯ ﻣﺎﻣﻮﻥ ﯾﺎ ﺟﻮﯾﺒﺎﺭﯼ ﻧﮯ ﻭﺿﻊ ﮐﯿﺎ ﮨﮯ . ‏( ﺍﻟﻼﺋﯽ
ﺍﻟﻤﺼﻨﻮﻋۃ ﻓﯽ ﺍﻻﺣﺎﺩﯾﺚ ﺍﻟﻤﻮﺿﻮﻋۃ . 1/417 ‏) .
ﺍﻣﺎﻡ ﺷﻮﮐﺎﻧﯽ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮨﮯ...